لبنان کی بگاڑ میں اضافہ کے ساتھ ساتھ مظاہرے میں بھی اضافہ

لبنان کی بگاڑ میں اضافہ کے ساتھ ساتھ مظاہرے میں بھی اضافہ

اتوار, 14 March, 2021 - 10:30
شہر بیروت میں کل جھڑپوں کے دوران مظاہرین کو سیکیورٹی فورسز پر پتھراؤ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
لبنان میں اقتصادی اور معیشی بدحالی بڑھتی ہی جا رہی ہے اور اسی کے ساتھ مقامی کرنسی اپنی گراوٹ میں ریکارڈ سطح تک پہنچ گئی ہے جس کی وجہ سے لبنانی سڑکوں پر نکلنے کے لئے مجبور ہو گئے ہیں جہاں انہوں نے مظاہرہ کیا اور سڑکوں کو بلاک کیا اور اپنے سانحے کے خاتمے کا مطالبہ کیا۔

پانچ روز پرسکون ماحول ہونے کے بعد جس کے دوران ملک میں کشیدگی دیکھنے کو نہیں ملی گزشتہ روز لبنان کے مختلف علاقوں میں دوبارہ احتجاجی تحریک شروع ہو گئی اور بیروت، شمال، جنوب اور بفاع کی اہم سڑکیں بند کردی گئیں اور بیروت میں خیمے دوبارہ لگا دئے گئے اور جہاں پارلیمنٹ کا صدر دفتر ہے وہاں مظاہرین نجمہ اسکوائر کے داخلی دروازے پر ایک آہنی دروازہ کو توڑنے اور باہر نکالنے میں کامیاب ہوگئے اور سیکیورٹی فورسز نے ان پر آنسو گیس کے گولے پھینکے لہذا وہ شہداء اسکوائر کی طرف روانہ ہوگئے۔


اس کے نتیجے میں ریٹائرڈ فوجیوں نے ایک مارچ کیا جو شہداء اسکوائر سے لے کر بندرگاہ بیروت تک ہوا اور اس کے دوران انہوں نے مطالبہ کیا کہ پارٹیوں کے باہر سے عبوری حکومت تشکیل دی جائے جو دیوالیہ پن سے اٹھ کھڑے ہونے اور پارلیمنٹ کے انتخابات کا انعقاد اختیارات کی تشکیل نو کے لئے کر سکے۔(۔۔۔)


اتوار 01 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 14 مارچ 2021ء شماره نمبر [15447]


Related News



انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا