روس نے ایرانی ملیشیاؤں کو تیل اور گیس کے فیلڈ سے کردیا بے دخل

روس نے ایرانی ملیشیاؤں کو تیل اور گیس کے فیلڈ سے کردیا بے دخل

اتوار, 14 March, 2021 - 16:00
شام میں تیل کے فیلڈ کی تصویر دیکھی جا سکتی ہے (آرکائیوز)
گزشتہ روز روس نے شمال مشرقی شام کے شہر رقہ کے دیہی علاقوں میں ایرانی ملیشیاؤں کو تیل اور گیس کے دو فیلڈ سے بے دخل کردیا ہے اور میڈیا ذرائع نے گزشتہ روز بتایا ہے کہ ایرانی "پاسداران انقلاب" کے تابع "فاطمیون" ملیشیاؤں کے انخلا کے چند گھنٹوں بعد ہی روس کی "پانچویں کور" کی فورسز نے رقہ کے جنوب مغرب میں "انقلاب" آئل فیلڈ پر اپنا کنٹرول جما لیا ہے اور انہوں نے یہ اقدام شمال مشرقی حمص کے بادیہ کی انتظامی سرحدوں پر واقع رقہ کے دیہی علاقوں کے طبقہ کے علاقے میں گیس کے "توینان" فیلڈ پر اپنا کنٹرول جمانے کے کئی گھنٹوں کے بعد کیا ہے۔

اس وقت " انقلاب" کی پیداوار کا تخمینہ لگ بھگ 2000 بیرل یومیہ ہے جبکہ اس سے قبل 2010 میں چھ ہزار بیرل تھا اور ایرانی اثر ورسوخ کے ماتحت اور ہیسکو کمپنی کی زیر نگرانی "توینان" فیلڈ سے تقریبا روزانہ 3 لاکھ مکعب میٹر صاف گیس اور 60 ٹن گھریلو گیس اور دو ہزار بیرل سنکشیٹ کی پیداوار ہوتی تھی۔(۔۔۔)


اتوار 01 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 14 مارچ 2021ء شماره نمبر [15447]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا