لیبیا کی حکومت نے طبرق میں حلف لیا

لیبیا کی حکومت نے طبرق میں حلف لیا

منگل, 16 March, 2021 - 11:00
طبرق میں لیبیا کی پارلیمنٹ کے اجلاس کے ایک منظر کو دیکھا جا سکتا ہے جس میں عبد الحمید دبیبہ کی سربراہی میں نئی حکومت نے کل حلف لیا ہے (اے پی)
لیبیا نے کل فائز السراج کی سربراہی میں وفاق حکومت اور اس کی صدارتی کونسل کا صفحہ اس وقت تبدیل کردیا جب دارالحکومت طرابلس میں سپریم کورٹ کے سامنے محمد المنفی کی سربراہی میں نئی ​​صدارتی کونسل اور عبد الحمید دبیبہ کی سربراہی میں اتحاد حکومت نے آئینی حلف لیا اور یہ کاروائی ملک کے مشرق میں واقع طبرق شہر کے پارلیمنٹ کے صدر دفتر میں ہوا ہے۔

دبیبہ نے اس اجلاس کے دوران حلف کا متن پڑھا ہے جو براہ راست نشر کیا گیا تھا اور یہ سب عرب، غیر ملکی سفیروں اور اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے نمائندوں کی موجودگی میں ہوا ہے۔


ترکی کے سفیر اور سپریم کونسل آف اسٹیٹ کے سربراہ خالد المشری کی موجودگی نے پارلیمنٹ کے ان کچھ ممبروں کو احتجاج کرنے پر آمادہ کیا جن میں دفاع اور سلامتی کمیٹی کے سربراہ طلال المیہوب ہیں جو ان دونوں کی موجودگی کے خلاف احتجاج کرنے کے بعد اجلاس سے دستبردار ہوگئے تھے اور انہوں نے انہیں سیشن سے نکالنے کی درخواست کی تھی اور یہ بھی کہا تھا کہ انھوں نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کی حمایت کی ہے۔(۔۔۔)


منگل 03 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 16 مارچ 2021ء شماره نمبر [15449]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا