تعاون کو بڑھانے کے لئے 5 سعودی-عراقی معاہدے اور سرمایہ کاریوں کا سلسلہ

تعاون کو بڑھانے کے لئے 5 سعودی-عراقی معاہدے اور سرمایہ کاریوں کا سلسلہ

جمعرات, 1 April, 2021 - 09:15
شہزادہ محمد بن سلمان اور مصطفیٰ الکاظمی کو گزشتہ روز درعیہ کے دورے کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (تصویر: جمال بنجوینی)
سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور دورے پر آئے عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی کے درمیان ہونے والی باضابطہ بات چیت کا اختتام دونوں ممالک کے مابین مختلف شعبوں میں 5 معاہدوں پر دستخط ہوا ہے جن میں ایک ایسے مشترکہ فنڈ کا قیام شامل ہے جس کی سرمایہ کا تخمینہ تین ارب ڈالر ہے جو عراق میں سرمایہ کاری میں مدد دینے کے لئے سعودی عرب کی طرف سے ایک مدد ہے۔

ریاض پہنچنے پر الکاظمی کا غیر معمولی سرکاری استقبال ہوا ہے اور انہوں نے یہ دعوہ خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز کی طرف سے موصولہ دعوت کے جواب میں کیا ہے اور یہ ایسا اقدام ہے جس سے سعودی عرب اور عراق کے تعلقات کو مستحکم ملے گا۔


رات کو ایک جاری کردہ مشترکہ بیان میں اشارہ کیا گیا ہے کہ ولی عہد اور عراقی وزیر اعظم کی بات چیت میں دونوں ملکوں کے مابین تعاون کے امکانات، علاقائی اور بین الاقوامی میدانوں میں ان سے متعلق امور اور مسائل کے سلسلہ میں تبادلۂ خیال ہوا ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 19 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 01 اپریل 2021ء شماره نمبر [15465]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا