روس کو شام کی ریاست کے ٹوٹنے کا خدشہ ہے

روس کو شام کی ریاست کے ٹوٹنے کا خدشہ ہے

جمعرات, 1 April, 2021 - 12:15
گزشتہ روز ماسکو میں ویلڈائی فورم کے تحت مشرق وسطی میں روس کے بارے میں اپنی بات پیش کرتے ہوئے روسی وزیر خارجہ سیرگئی لاوروف کو دیکھا جا سکتا ہے (ای پی اے)
گزشتہ روز روسی وزیر خارجہ سیرگی لاوروف نے واشنگٹن کی طرف سے علیحدگی پسند رجحانات کی حوصلہ افزائی کرنے کی پالیسیاں اپنانے کی صورت میں شام کی ریاست کو توڑنے کے خطرات سے خبردار کیا ہے اور اس میں شمال مشرقی شام میں کردوں کی طرف اشارہ کیا گیا ہے۔

گزشتہ روز ویلڈائی ڈائلاک فورم میں اپنی شرکت کے دوران لاوروف نے شام کے معاملے میں مغرب کے دوہرے معیار پر سخت تنقید کی ہے اور اشارہ کیا ہے کہ پابندیوں کی پالیسی اور دمشق پر لگائے گئے سخت دباؤ کی وجہ سے وہ سیاسی فائل میں کسی بھی قسم کی لچک اختیار نہیں کر سکتا ہے۔


شام کو اس وقت درپیش سب سے نمایاں خطرات کے بارے میں ایک سوال کے جواب میں لاوروف نے کہا ہے کہ موجودہ صورتحال میں بدترین خطرہ شامی ریاست کا ٹکڑے ٹکڑے ہونے کے سلسلہ میں سنگین امکان ہے اور خاص طور پر جاری کرد مسئلہ کے ساتھ یہ معاملہ مزید سنگین ہو جاتا ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 19 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 01 اپریل 2021ء شماره نمبر [15465]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا