رمضان اور "ایسٹر" کے دوران "کورونا" کی تعداد میں اضافہ ہونے کے بارے میں انتباہ کیا گیا ہے

رمضان اور "ایسٹر" کے دوران "کورونا" کی تعداد میں اضافہ ہونے کے بارے میں انتباہ کیا گیا ہے

جمعہ, 2 April, 2021 - 11:15
ایک نرس کو گزشتہ روز پیرس کے قریب واقع ایک اسپتال میں "کویوڈ ۔19" والے مریض کو اپنے کنبہ کے ساتھ عملی طور پر بات چیت کرنے میں مدد فراہم کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
ڈبلیو ایچ او میں مشرقی بحیرہ روم کے ریجنل ڈائریکٹر ڈاکٹر احمد المنظری نے گزشتہ روز رمضان اور ایسٹر کے مقدس مہینے کے دوران خطے میں کورونا وائرس کے انفیکشن میں ممکنہ اضافے سے لوگوں کو آگاہ کیا ہے۔

المنظری نے ایک فرضی پریس کانفرنس کے دوران جس میں تنظیم کے عہدیداروں اور یونیسف کے ریجنل ڈائریکٹر نے شرکت کی ہے کہا ہے کہ کوویڈ 19 کے وبائی امراض سے متعلق خطے میں اب بھی خدشات موجود ہیں اور گزشتہ ہفتے کے مقابلہ میں اس ہفتے 14 ممالک میں متاثرین کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوا ہے؛ کیونکہ اردن، عراق اور ایران میں وائرس کی سب سے زیادہ تعداد ریکارڈ کی گئی ہے جبکہ اردن، ایران اور پاکستان میں ​​اموات کی سب سے بڑی تعداد کا اعلان کیا گیا ہے۔


المنظری نے اس بات کی بھی وضاحت کی ہے کہ بہت سارے عوامل ہیں جو ان نئے معاملات میں اضافے سے وابستہ ہوسکتے ہیں اور اس کی وضاحت تشویشناک تغیرات کی بہتات سے بھی کی جاسکتی ہے لیکن اس سے بھی اہم بات یہ ہے کہ افراد میں احتیاطی تدابیر کو بروئے کار لانے کے سلسلہ میں نرمی پائی جا رہی ہے۔(۔۔۔)


جمعہ 20 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 02 اپریل 2021ء شماره نمبر [15466]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا