ایران اپنی ملیشیاؤں کو بڑھانے کے لئے شامیوں کی غربت کا استعمال کر رہا ہے

ایران اپنی ملیشیاؤں کو بڑھانے کے لئے شامیوں کی غربت کا استعمال کر رہا ہے

اتوار, 4 April, 2021 - 16:00
29 جنوری 2020 کو شامی شہریوں ادلب کے دیہی علاقوں سے کوچ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
انسانی حقوق کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران حکومت کے زیر انتظام علاقوں میں نوجوانوں کی بھرتی کرکے اپنے ملیشیاؤں کی تعداد کو بڑھانے کے لئے شامیوں کی غربت اور ان کے زندہ بحرانوں کو استعمال کررہا ہے۔

گزشتہ روز "سیریئن آبزرویٹری برائے ہیومن رائٹس" نے کہا ہے کہ فرات کے مغربی خطے میں ایرانی ملیشیاؤں کے لئے بھرتی کئے جانے والے افراد کی تعداد 9،850 افراد ہوگئی ہے کیونکہ علاقہ میں ایرانیوں اور شامی اور غیر شامی علاقہ سے تعلق رکھنے والے وفادار ملیشیاؤں کی تعداد بڑھ کر 25 ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے چکی ہے اور ساتھ ہی روس کو فرات کے مغرب میں قبائل اور لوگوں کو راغب کرنے کی اپنی کوششوں کے ذریعے ایرانیوں کا مقابلہ کرنے میں بڑی مشکل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔


دمشق کے دیہی علاقوں میں لبنان کی سرحد کے قریب شام کے علاقوں میں حزب اللہ کی زیرقیادت ایران نواز ملیشیاؤں کی مسلسل نقل وحرکت جاری ہے جو خطے کا حقیقی حکمران ہے اور ان نقل وحرکت میں دونوں ممالک کے مابین سرحدی پٹی پر زمینوں کی خریداری شامل ہے اور رصدگاہ کے مطابق حلب اور حمص کے دیہی علاقوں میں ایرانی کوششوں کی طرف بھی اشارہ کیا گیا ہے۔(۔۔۔)


اتوار 22 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 04 اپریل 2021ء شماره نمبر [15468]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا