اردن نے شہزادہ حمزہ اور قریبی ساتھیوں پر عدم استحکام کا الزام کیا عائد

اردن نے شہزادہ حمزہ اور قریبی ساتھیوں پر عدم استحکام کا الزام کیا عائد

پیر, 5 April, 2021 - 09:00
گزشتہ روز اردن کے شہریوں کو اس اقدام کی تفصیلات کے بارے میں نائب وزیر اعظم اور وزیر خارجہ ایمن الصفدی کے ٹیلی ویژن بیان دیکھتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے ہے (اے ایف پی)
اردن نے سابق ولی عہد شہزادہ حمزہ بن الحسین اور شاہ عبد اللہ دوم کے غیر حقیقی بھائی پر ملک کو غیر مستحکم کرنے کے لئے بیرونی جماعتوں سے بات چیت کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبد العزیز نے شاہ عبد اللہ دوم کے ساتھ ٹیلیفون پر ہونے والی گفتگو میں اس بات کی تصدیق کی ہے کہ سعودی عرب پوری یکجہتی کے ساتھ اردن کے ساتھ کھڑا ہے اور وہ اپنے ملک کی سلامتی اور اس کے استحکام کو برقرار رکھنے کے لئے اٹھائے جانے والے تمام اقدامات کی حمایت کرتا ہے۔


سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے بھی شاہ عبد اللہ دوم کو فون کیا ہے جس میں انہوں نے اردن کے ساتھ مملکت کی یکجہتی کی تصدیق کی ہے اور اسی طرح اردنی بادشاہ کو متعدد دوسرے عرب رہنماؤں کی طرف سے بھی فون آئے ہیں جبکہ غیر ملکی ممالک امریکہ اور برطانیہ نے بھی حمایت اور یکجہتی کے بیانات جاری کئے ہیں۔(۔۔۔)


پیر 23 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 05 اپریل 2021ء شماره نمبر [15469]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا