فلسطینیوں کو انتخابی سیکیورٹی انتشار کا خدشہ ہے

فلسطینیوں کو انتخابی سیکیورٹی انتشار کا خدشہ ہے

منگل, 13 April, 2021 - 15:15
فلسطینی الیکشن کمیشن کی ایک خاتون ملازمہ کو رواں سال 6 اپریل کو رام اللہ کے اندر کمیشن کے صدر دفتر میں پولنگ کی فہرستوں کے سامنے دیکھا جا سکتا ہے (اے اف بی)
فلسطینی قانون ساز انتخابات کی تاریخ قریب آنے کے ساتھ ہی فلسطینی صدر محمود عباس کے مخالف رہنما محمد دحلان کی سربراہی میں اصلاح پسند تحریک سے وابستہ مستقبل کی فہرست میں شامل ایک امیدوار سے تعلق رکھنے والے فرد کے مکان کو مغربی کنارے میں گولیوں کا نشانہ بنایا گيا ہے جس کی وجہ سے ووٹنگ کے عمل سے وابستہ سیکیورٹی انتشار کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔

شہر الخلیل میں مستقبل کی فہرست کے امیدوار وکیل حاتم شاہین کے گھر اور دفتر پر فائرنگ کا واقعہ سامنے آیا ہے جبکہ کچھ آڈیو ریکارڈنگ اور چند معلومات لیک ہوئے ہیں جن میں متعدد فہرستوں میں امیدواروں کو نشانہ بنایا گیا ہے لیکن اس کی صداقت کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔(۔۔۔)


منگل 01 رمضان المبارک 1442 ہجرى – 13 اپریل 2021ء شماره نمبر [15477]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا