اسد نے چوتھی مدت کے لئے بنے امید وار اور بیرونی دباؤ کو کیا پہلو تہی

اسد نے چوتھی مدت کے لئے بنے امید وار اور بیرونی دباؤ کو کیا پہلو تہی

جمعرات, 22 April, 2021 - 16:45
گزشتہ روز قامشلی میں شامی حکومت کے وفاداروں کے ساتھ جھڑپوں کے دوران دو کرد جنگجوؤوں کو دیکھا جا سکتا ہے (شمالی پریس)
سرکاری میڈیا رپورٹس کے مطابق کل شام کے صدر بشار الاسد نے 26 مئی کو ہونے والے آئندہ انتخابات کے لئے باضابطہ طور پر امیدواری کی درخواست جمع کرائی ہے اور یہ ایک ایسا اقدام ہے جس کے نتائج کا فیصلہ ان کی چوتھی صدارتی میعاد کے حق میں طے شدہ ہے اور مبصرین کا کہنا ہے کہ اس انتخابات کے بارے میں بیرونی دباؤ کو نظرانداز کیا گیا ہے جسے مغربی ممالک نے غیر قانونی قرار دیا ہے اور یہ انتخابات حکومت کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کا سبب نہیں بنیں گے۔

دوسری جانب ملک کے مشرق میں قامشلی میں دمشق سے وابستہ ایک علاقے میں شامی حکومت کی وفادار "نیشنل ڈیفنس فورسز" اور کرد "اندرونی سلامتی" (آسیش) کے مابین جھڑپیں بڑھ گئیں ہیں۔(۔۔۔)


جمعرات 10 رمضان المبارک 1442 ہجرى – 22 اپریل 2021ء شماره نمبر [15486]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا