"موساد" ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کو بہتر بنانے کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے

"موساد" ایران کے ساتھ جوہری معاہدے کو بہتر بنانے کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے

ہفتہ, 1 May, 2021 - 16:15
امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کو دیکھا جا سکتا ہے (اے پی)
امریکی اور اسرائیلی عہدیداروں نے جوہری معاہدے کے ساتھ مکمل تعمیل کی طرف لوٹنے کی کوشش میں ایران کے مابین ویانا میں موجودہ مذاکرات کے بارے میں اپنی مشترکہ افہام توفہیم کو تقویت پہنچانے کے مقصد سے واشنگٹن میں اپنی ملاقاتوں کو تیز کردیا ہے  اور یہ سب اس اسرائیل سے مضبوط خدشات کی روشنی میں کیا گیا ہے جو اس معاہدے کی بہتری کے لئے دباؤ ڈال رہا ہے تاکہ تہران کو کسی بھی جوہری ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کے لئے یقینی بنایا جا سکے۔
 
گزشتہ ہفتوں کے دوران انٹیلیجنس خدمات اور قومی سلامتی کونسل کے اعلی عہدیداروں کے واشنگٹن پہنچنے سے اسرائیلی خدشات کی عکاسی ہوئی ہے اور جمعرات کے روز امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ کے ان دیگر عہدیداروں کی موجودگی میں اسرائیلی جنرل انٹلیجنس موساد کے سربراہ یوسی کوہن سے ملاقات کی ہے جن میں نائب سکریٹری برائے خارجہ وینڈی شرمین، ان کے مشیر ڈیرک چولٹ ، قومی سلامتی کے مشیر جیک سلیوان اور مشرق وسطی اور افریقہ امور کے کوڈینیٹر بریٹ میک گورک ہیں اور نیز واشنگٹن میں اسرائیلی سفیر گیلڈ ارڈن نے بھی شرکت کی ہے۔(۔۔۔)

ہفتہ 19 رمضان المبارک 1442 ہجرى – 01 مئی 2021ء شماره نمبر [15495]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا