ٹرمپ انتظامیہ کے ذریعہ قاسم سلیمانی کے قتل کے منصوبے کی تفصیلات کے سلسلہ میں ایک رپورٹ کا انکشاف

ٹرمپ انتظامیہ کے ذریعہ قاسم سلیمانی کے قتل کے منصوبے کی تفصیلات کے سلسلہ میں ایک رپورٹ کا انکشاف

اتوار, 9 May, 2021 - 10:30
ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کو دیکھا جا سکتا ہے (اے بی)
3 جنوری 2020 کو قدس فورس کے کمانڈر ایرانی جنرل قاسم سلیمانی اور پاپولر موبلائزیشن فورسز کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس بغداد کے بین الاقوامی ہوائی اڈہ کے قریب اس ڈرون حملے میں مارے گئے ہیں جس کا حکم سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دیا تھا۔

یاہو نیوز ویبسائٹ کے ذریعہ شائع ہونے والی ایک رپورٹ میں سلییمانی کو مارنے کے لئے ٹرمپ انتظامیہ کے منصوبے کی نئی تفصیلات سامنے آئی ہیں اور یہ تفصیلات ویبسائٹ کے ذریعہ 15 موجودہ اور سابق امریکی عہدیداروں کے ساتھ کیے گئے انٹرویو کے مطابق ہیں۔


اس رپورٹ میں امریکی اسپیشل فورس "ڈیلٹا فورس" کی 3 ٹیموں کے بارے میں بتایا گیا ہے جو بغداد بین الاقوامی ہوائی اڈے کے قریب سڑک کے کنارے پرانی عمارتوں یا گاڑیوں میں روپوش ہو گئے جو اصلاح کرنے والے کارکنوں کے بھیس میں سلیمانی کے منتظر تھے۔(۔۔۔)


اتوار 27 رمضان المبارک 1442 ہجرى – 09 مئی 2021ء شماره نمبر [15503]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا