خلیجی ممالک نے عید کے دوران احتیاطی تدابیر کو کیا کم

خلیجی ممالک نے عید کے دوران احتیاطی تدابیر کو کیا کم

بدھ, 12 May, 2021 - 09:15
جنیوا میں عالمی ادارۂ صحت نے متنبہ کیا ہے کہ ہندوستان میں دریافت کیا گیا کورونا وائرس کا تبدیل شدہ ورزن "B 1.617" پھیلنے کے زیادہ قابل دکھائی دے رہا ہے اور اسے عالمی تشویش کا باعث بننے کے طور پر درجہ بندی کیا گیا ہے اور یہ وبا اب بھی بہت سے ممالک میں پھیل رہی ہے اور اس نے دنیا میں تقریبا 3.3 ملین افراد کو ہلاک کیا ہے۔
 
ہندوستان میں کورونا وائرس کے بحران کی شدت میں اضافے کا انکشاف کل تک جاری رہا ہے کیونکہ روزانہ کے اعتبار سے نئے انفیکشن کی تعداد بڑھ کر 330 ہزار تک پہنچ گئی ہے جبکہ اموات کی تعداد 3،800 تک پہنچ گئی ہے۔

اس کے علاوہ خلیجی ممالک نے اپنے احتیاطی تدابیر میں نرمی کیا ہے جبکہ دوسرے ممالک نے عید الفطر کے موقع پر اجتماعات کو روکنے اور ابھرتے ہوئے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو محدود کرنے کے لئے اپنے اقدامات سخت کردیئے ہیں اور ان میں سے کچھ ممالک نے تو جامع کرفیو تک کا اعلان کیا ہے اور سلطنت عمان میں جزوی پابندی عائد کی گئی ہے اور کویت میں اس کے خاتمے کا اعلان کیا گیا ہے اور اس مہینے کے آخر سے قطر میں اقدامات میں نرمی لائی گئی ہے اور سعودی عرب اپنی معمول کی زندگی میں پوری طرح واپسی کی طرف لوٹ رہا ہے اور بین الاقوامی پروازوں کو مکمل طور پر شروع کیا گیا ہے اور 17 مئی سے ملک کے ہوائی اڈوں کو کھولنے کی کارروائی شروع ہونے  جارہی ہے۔(۔۔۔)


بدھ 30 رمضان المبارک 1442 ہجرى – 12 مئی 2021ء شماره نمبر [15506]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا