انتخابی بہتری کے بعد دمشق میں معاشی بے چینی کا ماحول

انتخابی بہتری کے بعد دمشق میں معاشی بے چینی کا ماحول

منگل, 8 June, 2021 - 10:30
18 مئی کو دمشق کی ایک سڑک پر شام کے صدر بشار الاسد کی تصاویر دیکھی جا سکتی ہیں (رائٹرز)
شام کے دارالحکومت دمشق میں اس صدارتی انتخابی مہم کے دوران جس میں صدر بشار الاسد کی جیت ہوئی ہے عارضی بہتری کے بعد زندگی کی خرابی کے بارے میں تشویش پائی جارہی ہے۔

26 مئی کو ہونے والے انتخابات سے قبل دمشق کے بیشتر علاقوں میں بجلی کی فراہمی میں نمایاں بہتری دیکھنے میں آئی تھی کیونکہ راشننگ پروگرام 4 گھنٹے کٹوتی سے 2 گھنٹے کٹوتی تک آگیا تھا اور پینے کے پانی شہریوں کے گھروں میں مسلسل چوبیس گھنٹے آرہے تھے۔


اس عرصے میں صفائی ستھرائی کی مستقل مزاجی کا بھی مشاہدہ کیا گیا ہے اور صفائی ستھرائی کے کاریگر روزانہ کی بنیاد پر گلیوں سے کچرا اٹھایا کرتے تھے اور سبزیوں، پھلوں اور کھانے پینے کی بیشتر چیزوں کی قیمتوں میں کسی حد تک اچھائی آئی تھی۔


تاہم پچھلے مہینے کی 29 تاریخ کو انتخابی نتائج کے اعلان کے ایک دن بعد بجلی اور راشن پروگرام کی صورتحال ویسی ہی ہو گئ جیسے پہلے تھی۔(۔۔۔)


منگل 27 شوال المعظم 1442 ہجرى – 08 جون 2021ء شماره نمبر [15533]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا