رئیسی نے جامع معاہدے کا دروازہ بند کردیا ہے

رئیسی نے جامع معاہدے کا دروازہ بند کردیا ہے

منگل, 22 June, 2021 - 08:15
گزشتہ روز صدارتی انتخابات میں اپنی فتح کا اعلان کرنے کے دو دن بعد ابراہیم رئیسی کو اپنی پہلی پریس کانفرنس کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (ای پی اے)
سخت گیر قدامت پسند ایرانی صدر ابراہیم رئیسی نے علاقائی سرگرمیوں اور بیلسٹک میزائل پروگرام سے متعلق ایک اور جامع معاہدے پر بات چیت کا دروازہ بند کردیا ہے اور امریکی صدر جو بائیڈن سے ملاقات سے انکار کرتے ہوئے انتظامیہ سے فوری طور پر پابندیاں ختم کرنے اور جوہری معاہدے کی طرف واپس کی تجویز پیش کی ہے۔

صدارتی مقابلہ میں کامیابی حاصل کرنے کے بعد اپنی پہلی پریس کانفرنس میں 60 سالہ رئیسی نے اپنی پالیسی خاص طور پر خارجہ پالیسی کی نشاندہی کی ہے اور انتخابات کے بارے میں فخر سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک بھر میں شرکت کی تعداد میں کمی آئی ہے اور ان کی تعداد 48 فیصد تک پہنچ گئی ہے اور انہوں نے یہ بھی کہا کہ دنیا کو یہ جان لینا چاہئے کہ حالات بدل چکے ہیں اور دنیا کے سامنے نئے حالات ہیں۔


رئیسی نے امریکی انتظامیہ کو ایک سے زیادہ مرتبہ مخاطب بنایا ہے اور کہا ہے کہ زیادہ سے زیادہ دباؤ موثر نہیں تھے اور انہیں اس پر دوبارہ غور کرنا چاہئے اور انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ کسی فائدہ کے بغیر مذاکرات کو طول دینے کی اجازت نہیں دیں گے اور ہر اجلاس کے کچھ نہ کچھ نتائج ایرانی عوام کے لئے سامنے آنے چاہئے اور انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ میزائل اور علاقائی معاملات بات چیت کے قابل نہیں ہیں اور انہوں نے یورپی باشندوں کو امریکی دباؤ سے دستبردار نہ ہونے اور جوہری معاہدے کے ساتھ کام کرنے کا مشورہ دیا ہے۔(۔۔۔)


منگل 12 ذی قعدہ 1442 ہجرى – 22 جون 2021ء شماره نمبر [15547]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا