ترکی: سب سے بڑی کرد نواز پارٹی حزب پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ

ترکی: سب سے بڑی کرد نواز پارٹی حزب پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ

منگل, 22 June, 2021 - 14:15
گزشتہ روز انقرہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بروین بولڈان اور مدحت سانجار کو دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
کل ترکی کی سپریم آئینی عدالت نے کرد نواز پیپلز پارٹی (ایچ ڈی پی) کو بند کرنے اور اس کے سیکڑوں رہنماؤں اور ممبروں کی سیاسی سرگرمیوں پر 5 سال کی مدت کے لئے پابندی لگانے کے معاملے میں سپریم کورٹ اپیل کے ریپبلیکن پراسیکیوٹر کی پیش کردہ فہرست کو قبول کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دوبارہ شروع کرنے کی عدالت کے ریپبلیکن پراسیکیوٹر بکر شاہین نے گزشتہ ہفتے اس الزام کی فہرست کو دوبارہ پیش کیا ہے جسے عدالت نے پہلی مرتبہ مارچ میں پیش کرنے کے وقت مسترد کردیا تھا اور اس کی وجہ شواہد اور طریقہ کار کی کمی تھی لیکن اب ان کمیوں اور کوتاہیوں کو پورا کرنے کے بعد عدالت میں دوبارہ پیش کیا گیا ہے۔


آئینی عدالت نے کہا ہے کہ فرد جرم میں کوتاہیاں دور کردی گئیں ہیں اور اس نے اسے متفقہ طور پر قبول کرلیا ہے اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ اس نے عدالت عظمیٰ کے پراسیکیوٹر کے دفتر سے عدالتی حکم جاری کرنے کے لئے استغاثہ کی اس درخواست کو قبول کیا ہے جس میں پارٹی کو سرکاری خزانے سے ملنے والی مدد سے متعلق بینک اکاؤنٹ پر پابندی عائد کردی گئی ہے اور اس مرحلے پر اسے مسترد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔(۔۔۔)


منگل 12 ذی قعدہ 1442 ہجرى – 22 جون 2021ء شماره نمبر [15547]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا