سعودی عرب میں خواتین فٹ بالروں کے لئے نئی قانون سازی

سعودی عرب میں خواتین فٹ بالروں کے لئے نئی قانون سازی

بدھ, 14 July, 2021 - 13:15
سعودی فٹ بال ایسوسی ایشن نے پیشہ ورانہ ضابطے کو ان ترامیم سے مشروط کیا ہے جس میں خواتین کھلاڑیوں کے لئے خصوصی قانون سازی شامل ہے (الشرق الاوسط)
اپنی نوعیت کے پہلے اقدام ہے میں سعودی فٹ بال ایسوسی ایشن کی پیشہ ورانہ اور پلیئر کنڈیشن کمیٹی نے اپنے اس نئے ضابطے میں ترمیمات کی ہے جنہیں حال ہی میں اس نے خواتین کھلاڑیوں کے لئے دفعات اپناتے ہوئے سعودی کلبوں کی منظوری سے منظور کیا ہے اور اس میں سعودی عرب ویمن لیگ کے آفیشل آغاز اور کلب پروفیشنل لیگ میں خواتین کی ٹیموں کی تشکیل، نیز پہلی، دوسری، تیسری اور چوتھی لیگ کی طرف اشارہ ہے۔

گزشتہ ہفتے منظور شدہ نئے ضابطے کے مطابق باب 15 آزادانہ طور پر خواتین کھلاڑیوں سے متعلق دفعات کے لئے مختص ہے اور آرٹیکل 38 میں متعدد بنود شامل ہیں جن میں پہلے بند میں شدت کے ساتھ کہا گیا ہے کہ معاہدہ اس شرط پر معطل نہیں ہوسکتا ہے کہ کھلاڑی حاملہ نہیں ہے، یا مدت کے دوران حاملہ نہیں ہو سکتی ہے  یا زچگی کی چھٹی کے دوران وہ معطل ہوگی یا عام طور پر زچگی سے متعلق حقوق سے محروم رکھا جائے گا۔(۔۔۔)


بدھ 04 ذی الحجہ 1442 ہجرى – 14 جولا‏ئی 2021ء شماره نمبر [15569]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا