امریکہ عراق میں اپنی فوجی موجودگی کو نئے سرے سے تعبیر کرے گا

امریکہ عراق میں اپنی فوجی موجودگی کو نئے سرے سے تعبیر کرے گا

ہفتہ, 24 July, 2021 - 16:45
امریکی فوجی گزشتہ اگست میں بغداد کے شمال میں تاجی فوجی اڈہ کو عراقی فورسز کے حوالے کرنے کی ایک تقریب کے دوران دیکھے جے سکتے ہیں
امریکی عہدیداروں کے بیانات میں عراقی عہدیداروں کی خواہشات سے اتفاق کے امکان کے بارے میں متعدد اشارے سامنے آئے ہیں اور پیر کے روز صدر جو بائیڈن کے ساتھ عراقی وزیر اعظم مصطفی الکاظمی کے ملاقات کے بعد ایک بیان جاری کیا گیا ہے جس میں اصولی طور پر اعلان کیا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے مابین اس گفت وشنید کے چوتھے دور کے اختتام کے طور پر امریکی افواج اس سال کے آخر تک عراق چھوڑ دیں گی۔

ایک امریکی عہدے دار کا کہنا ہے کہ وال اسٹریٹ جرنل کے مطابق واشنگٹن بنیادی طور پر عراق میں کچھ موجودگی کے بجائے امریکی فوج کی موجودگی کو واضح کرنے کے ذریعے بیان کی شرائط پر پورا اترنے کا ارادہ رکھتا ہے اور انہوں نے مزید کہا کہ یہ ایک عددی ایڈجسٹمنٹ نہیں ہے بلکہ ہماری اسٹریٹجک ترجیحات کے مطابق امریکی افواج جو کریں گے اس کی عملی وضاحت ہے۔(۔۔۔)


ہفتہ 43 ذی الحجہ 1442 ہجرى – 24 جولا‏ئی 2021ء شماره نمبر [15579]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا