ایئر برج بند ہونے سے قبل کابل کے انخلا میں تیزی آئی ہے

ایئر برج بند ہونے سے قبل کابل کے انخلا میں تیزی آئی ہے

جمعرات, 26 August, 2021 - 05:00
گزشتہ روز کابل ایئرپورٹ کے سامنے انخلا کی آخری پرواز کے ذریعہ جانے کی امید میں افغانوں کا ہجوم دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
غیر ملکیوں اور ان کے ساتھ تعاون کرنے والے افغانوں کے لیے کابل ایئر پورٹ سے فضائی انخلاء کے پل کی سرگرمیوں کی رفتار میں نمایاں تیزی کا مشاہدہ کیا گیا ہے کیونکہ اگلے منگل 31 اگست (افغانستان) سے امریکی انخلا کی تکمیل کے ساتھ الٹی گنتی شروع ہو جائے گی۔

امریکی محکمہ دفاع نے کل اعلان کیا ہے کہ اس نے صرف پچھلے 24 گھنٹوں میں 19،000 لوگوں کو منتقل کیا ہے جس کے ساتھ ہی کابل سے ایئر برج کے ذریعے منتقل ہونے والوں کی کل تعداد تقریبا 88 ہزار افراد تک پہنچ گئی ہے جن میں 60،000 سے زائد وہ افغانی بھی شامل ہیں جو "طالبان" تحریک کے تحت رہنا نہیں چاہتے ہیں۔


پینٹاگون کے ترجمان جان کربی نے کل کہا ہے کہ ہماری توجہ ان لوگوں کو سکیورٹی فراہم کرنے میں ہے جو افغانستان سے نکلنا چاہتے ہیں اور انہوں نے اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ صدر جو بائیڈن نے دہشت گرد گروہوں کے حملوں کے بڑھتے ہوئے خطرات کی وجہ سے افغانستان سے انخلا کے لیے مقرر کردہ ڈیڈ لائن پر عمل کرنے کے لیے محکمۂ دفاع کی سفارش کو منظوری دے دی ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 16 محرم الحرام 1443 ہجرى – 26 اگست 2021ء شماره نمبر [15612]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا