امریکہ نے افغانستان میں بدترین حالت سے خبردار کیا ہے

امریکہ نے افغانستان میں بدترین حالت سے خبردار کیا ہے

پیر, 6 September, 2021 - 09:45
گزشتہ روز کابل میں داعش کے ایک مشتبہ جنگجو کو طالبان کی گاڑی کے اندر آنکھوں پر پٹی باندھ کر بیٹھے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (روئٹر)
ایک طرف "طالبان" تحریک نے ریاست پنجشیر میں اپنی عسکری پیش رفت جاری رکھی ہے اور دوسری طرف دنیا کو اس کی نئی حکومت کی انتظامیہ کا انتظار ہے اور امریکی جوائنٹ چیفس آف سٹاف کے چیئرمین جنرل مارک ملی نے گروہوں کی جنگ میں داخل ہونے والی طاقت سے ایک حکومت کی طرف تبدیل ہونے کے سلسلہ میں تحریک کی صلاحیت پر سوال اٹھایا ہے اور ملک میں بدترین حالات سے آگاہ بھی کیا ہے۔

کیا امریکہ افغانستان سے اپنی افواج کے انخلاء کے بعد محفوظ ہو گیا ہے اس سوال کے جواب میں ملی نے کہا ہے کہ کم از کم وسیع خانہ جنگی کا زیادہ امکان ہے اور انہوں نے اس بات سے آگاہ کیا ہے کہ یہ منظر نامی حقیقت میں القاعدہ کی تشکیل نو یا آئی ایس آئی ایس یا دیگر ہزارہا دہشت گرد گروہوں کی ترقی کا باعث بن سکتا ہے۔


اسی سلسلہ میں امریکی سیکریٹری آف اسٹیٹ اینڈ ڈیفنس انٹونی بلنکن اور لائیڈ آسٹن نے خلیجی اور یورپی دورے کا آغاز کیا ہے تاکہ افغانستان سے اپنے افراتفری انخلا کے بعد عالمی سطح پر امریکہ کے اہم کردار کی تصدیق کی جاسکے۔(۔۔۔)


پیر 28 محرم الحرام 1443 ہجرى – 06 ستمبر 2021ء شماره نمبر [15623]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا