روس "آٹھویں بریگیڈ" کے ذریعے ایران کے اثر ورسوخ کو روکے گا

روس "آٹھویں بریگیڈ" کے ذریعے ایران کے اثر ورسوخ کو روکے گا

منگل, 11 January, 2022 - 15:30
شام میں روسی فوج کو دیکھا جا سکتا ہے (گیٹی امیجز)
شام کے صحرا میں داعش کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کی کارروائی شروع کرنے کی اپنی تیاریوں کے ساتھ روس شام میں ایران اور اس کی ملیشیاؤں کے اثر ورسوخ کو روکنے کے لیے مزید اقدامات کرنے کے لیے پرعزم نظر آرہ ہے اور اس کا اظہار "آٹھویں بریگیڈ" کے حق میں پولرائزیشن کی ایک وسیع مہم میں ہوا ہر جو روسیوں کی وفادار ہے اور یہ ان علاقوں میں ہوا ہے جو ایران کے اثر ورسوخ کے دائرے میں ہیں۔


سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے کل (پیر) کی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ روسی اقدام شام میں ایرانی اثر ورسوخ کو کم کرنے اور شام کے فیصلے پر اس کے ساتھ کنٹرول کی شراکت داری کو توڑنے کی کوششوں کے فریم ورک کے اندر آیا ہے اور انہوں نے مزید کہا کہ روسی فریق نے اپنے وفادار "آٹھویں بریگیڈ" کے ذریعے تدمر شہر کے وسط میں بعث پارٹی کے ہیڈ کوارٹر کے اندر "بادیہ انٹیلی جنس برانچ" کے قریب اپنی صفوں کے لیے الحاق کا دفتر کھولا ہے جس کا مقصد تدمر اور آس پاس کے علاقوں اور حمص کے پورے مشرقی صحرا کے لوگوں کو اپنی طرف متوجہ کرنا ہے۔(۔۔۔)


منگل  08 جمادی الآخر 1443 ہجری  - 11  جنوری  2021ء شمارہ نمبر[15750]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا