میزائل اور بم کی وجہ سے عراق میں کشیدگی کی سطح بڑھ رہی ہے

میزائل اور بم کی وجہ سے عراق میں کشیدگی کی سطح بڑھ رہی ہے

ہفتہ, 15 January, 2022 - 13:45
گزشتہ اتوار کے دن محمد الحلبوسی کو پارلیمنٹ کے اسپیکر کے طور پر اپنے انتخاب کے موقع پر اراکین پارلیمنٹ کے درمیان میں دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
گرین زون میں امریکی سفارت خانے کی طرف ایران کے قریب سمجھے جانے والے دھڑوں کی طرف سے داغے گئے میزائل اور کل فجر کے وقت دو سنی اتحاد کے ہیڈکوارٹر کو نشانہ بنانے والے دو گرینیڈ حملوں نے عراق میں سیاسی کشیدگی کی سطح کو بڑھا دیا ہے۔

تین "کاتیوشا" میزائل امریکی سفارت خانے کی طرف داغے گئے ہیں اگرچہ دو میزائل "سیرام" دفاعی نظام کے ذریعہ گرا دئے گئے ہیں لیکن تیسرا میزائل سفارت خانے کے قریب قادسیہ کمپلیکس میں لڑکیوں کے سیکنڈری اسکول پر جا گرا جس سے ایک خاتون اور ایک بچہ زخمی ہوا ہے۔


جب کہ ایران کے قریبی مسلح دھڑوں نے اس بات کی تردید کی ہے کہ انہوں نے ایسا کیا ہے، مقتدی الصدر نے جو کچھ ہوا اس پر حملہ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا ہے اور کہا ہے کہ جو لوگ مزاحمت کا دعویٰ کرتے ہیں وہ اس طرح کے طریقوں سے قبضہ برقرار رکھنا چاہتے ہیں کیونکہ یہ ان کے اسلحہ اٹھانے کے سلسلہ میں ان کی موجودگی کا جواز پیش کر رہا ہے۔(...)


ہفتہ  12 جمادی الآخر 1443 ہجری  - 15  جنوری  2021ء شمارہ نمبر[15754] 


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا