تہران نے سٹاکہوم پر دباؤ ڈالنے کے لئے ایک سویڈش سائنسدان کو پھانسی دینے کی دھمکی دی ہے

تہران نے سٹاکہوم پر دباؤ ڈالنے کے لئے ایک سویڈش سائنسدان کو پھانسی دینے کی دھمکی دی ہے

جمعرات, 5 May, 2022 - 11:30
ایرانی انسانی حقوق کی تنظیموں کی جانب سے شائع کردہ ایک تصویر دیکھی جا سکتی ہے جس میں جلالی کی تہران میں حراست سے پہلے اور اس کے دوران کی حالت کا موازنہ کیا گیا ہے
کل ایران نے ایک سویڈش ایرانی سائنسدان کو تین ہفتوں کے اندر اندر اسرائیلی انٹیلی جنس کے لیے جاسوسی کرنے کے الزام میں پھانسی دینے کی دھمکی دی ہے جسے مبصرین نے اسٹاک ہوم پر دباؤ ڈالنے کی کوشش سمجھا ہے اور یہ فیصلہ سویڈن کی عدالت کی جانب سے 1988 میں جنگی جرائم کے ارتکاب کے الزام میں ایک ایرانی اہلکار کے مقدمے کی سماعت کے اختتام کے ساتھ موافق ہے اور حتمی فیصلہ اگلے جولائی میں جاری کیا جائے گا۔

سرکاری ایجنسی "اسنا" نے (نامعلوم ذرائع کے حوالے سے) اطلاع دی ہے کہ سویڈش-ایرانی سائنسدان احمد رضا جلالی جسے 2016 میں ایران کے ایک تعلیمی دورے کے دوران گرفتار کیا گیا تھا ان کو 21 مئی تک پھانسی دے دی جائے گی اور سویڈن کی وزیر خارجہ این لِنڈ نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر کہا ہے کہ سویڈن اور یورپی یونین سزائے موت کی مذمت کرتے ہیں اور جلالی کی رہائی کا مطالبہ کرتے ہیں اور یہ ان نادر موقعوں میں سے ایک ہے جب ایران کسی غیر ملک کے لیے جاسوسی کے الزام میں کسی شخص کو پھانسی دینے کے لیے پیشگی تاریخ طے کررہا ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 04 شوال المعظم  1443 ہجری  - 05  اپریل   2022ء شمارہ نمبر[15864]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا