امریکہ اور اسرائیل ایرانی یورینیم افزودہ سرنگوں کی نگرانی کر رہے ہیں

امریکہ اور اسرائیل ایرانی یورینیم افزودہ سرنگوں کی نگرانی کر رہے ہیں

ہفتہ, 18 June, 2022 - 13:00
جنوبی ایران میں نتنز جوہری تنصیب کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
امریکی اور اسرائیلی انٹیلی جنس حکام نے انکشاف کیا ہے کہ ایران نتنز جوہری تنصیب کے جنوب میں سرنگوں کا ایک وسیع نیٹ ورک کھود رہا ہے جس کے بارے میں ان کے خیال میں تہران کی اب تک کی سب سے بڑی کوشش ہے کہ پہاڑوں کی گہرائی میں نئی ​​جوہری تنصیبات تعمیر کی جائیں جو بم اور الیکٹرانک حملوں کا مقابلہ کر سکیں۔

اگرچہ یہ تعمیر سیٹلائٹ امیجز میں دکھائی دے رہے ہیں اور نئی جوہری تنصیبات کے پھیلاؤ پر عمل کرنے والے گروپوں کی طرف سے اس کی نگرانی کی گئی ہے امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ کے اہلکاروں نے اس بارے میں عوامی سطح پر کوئی بات نہیں کی ہے لیکن اسرائیلی وزیر دفاع بینی گینٹز نے ایک بار اپنی اس تقریر میں سرسری انداز میں اس کا ذکر کیا ہے جو انہوں نے گزشتہ ماہ دیا ہے۔


امریکی اخبار "نیویارک ٹائمز" نے دونوں ممالک کے حکام کے حوالے سے کہا ہے کہ وہ ایرانی ڈرلنگ کی سرگرمیوں پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور یہ بھی واضح کیا کہ دونوں ممالک کے قومی سلامتی کے حکام کے ساتھ کیے گئے انٹرویوز میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایران کسی بھی دوسرے وقت کے مقابلے میں آج جوہری ہتھیار بنانے کے قریب ہے جبکہ اس مقصد تک پہنچنے کے لئے کی جانے والی کوششوں میں دو دہائی سے زیادہ عرصہ کا وقت لگ گیا ہے اور قومی سلامتی کے حکام کا یہ بھی ماننا ہے کہ تہران جوہری ہتھیار بنانے سے پہلے آخری مرحلے پر رک بھی سکتا ہے۔(۔۔۔)


ہفتہ  19 ذی القعدہ  1443 ہجری  - 18    جون   2022ء شمارہ نمبر[15908]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا