آبنائے ہرمز میں امریکہ اور ایران کے درمیان ہوئی کشمکش

آبنائے ہرمز میں امریکہ اور ایران کے درمیان ہوئی کشمکش

بدھ, 22 June, 2022 - 09:15
پرسو روز امریکی بحریہ کی طرف سے جاری کردہ ایک تصویر میں "پاسدران انقلاب" کی کشتیوں کو آبنائے ہرمز میں "سیروکو" نامی بحری جہاز کے قریب آتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
امریکی بحریہ نے کل اس بات کی تصدیق کی ہے کہ پانچویں بحری بیڑے کے جنگی جہاز اسٹریٹجک آبنائے ہرمز میں ایرانی پاسداران انقلاب کی سپیڈ بوٹس کے ساتھ کشیدہ تصادم میں داخل ہوئے ہیں جسے دونوں ممالک کے درمیان تازہ ترین ایک بحری کشمکش کے طور پر دیکھا جا سکتا ہے۔

مشرق وسطیٰ میں امریکی بحریہ کے پانچویں بحری بیڑے نے کہا ہے کہ "یو ایس ایس سیرکو" اور "یو ایس این ایس چوکٹاؤن کاؤنٹی" نے 3 ایرانی جھنڈے والی کشتیوں کو غیر محفوظ اور غیر پیشہ ورانہ انداز میں قریب آنے سے روکنے کے لیے انتباہی گولیاں چلائیں ہیں اور اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا ہے کہ ایک کشتی تو بڑی تیزی کے ساتھ خطرناک حد تک پہنچ گئی تھی اور اس وقت تک اپنا راستہ نہیں بدلا جب تک کہ امریکی گشتی جہاز نے قابل سماعت انتباہی سگنل جاری کیا اور پھر ایک اور انتباہی لائٹ سگنل بھی جاری کیا اور یاد رہے کہ یہ واقعہ ایک گھنٹے تک جاری رہا اور بحریہ کی طرف سے جاری کردہ ایک مختصر ویڈیو کلپ میں اس تصادم کو دکھایا گیا ہے۔(۔۔۔)


بدھ  23  ذی القعدہ  1443 ہجری  - 22    جون   2022ء شمارہ نمبر[15912]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا