صائب سلام نے "شہابی حکومت" کے خاتمے کی تفصیلات بیان کیں

صائب سلام نے "شہابی حکومت" کے خاتمے کی تفصیلات بیان کیں

"الشرق الاوسط" نے انكی یادداشتوں کی آخری قسط شائع کی ہے۔
پیر, 27 June, 2022 - 05:45
صائب سلام جمال عبدالناصر کے ساتھ

آج "الشرق الاوسط" کی طرف سے شائع کردہ اپنی یادداشتوں کی آخری قسط میں، مرحوم لبنانی وزیر اعظم صائب سلام نے ان مذاکرات کی کہانی بیان کی جو 1970 میں لبنان میں "شہابی حکومت" کے خاتمہ، جس کی نمائندگی صدر فواد شہاب کر رہے تھے، اور سلیمان فرنجیہ کے بطور صدر جمہوریہ منتخب ہونے کے ساتھ ختم ہوگئے. انہوں نے انکشاف کیا کہ ان کی واپسی کے بارے میں مصری منفی رویہ ان کے انتخاب لڑنے میں ہچکچاہٹ کے پیچھے اہم عوامل میں سے ایک تھا۔
سلام کہتے ہیں کہ 28 جولائی 1970 کو "میں نے ایک شام کی میٹنگ بلائی، جس میں کامل الاسد، کمال جنبلاط اور تقی الدین الصالح سمیت بہت سے نمائندوں اور کارکنوں نے شرکت کی۔ اس میٹنگ کے دوران ہم نے بہت سے نامزد کردہ ناموں کا جائزہ لیا، پھر اچانک اور بغیر کسی تمہيد کے سلیمان فرنجیہ کا نام پیش کر دیا گیا۔ وہ مزید کہتے ہیں: "لہٰذا ہم اسی ریکارڈ پر واپس آئے، ایک ریکارڈ کہ اگر میں شہاب کی حمایت کرتا ہوں تو میں حکومت کی سربراہی کی ضمانت دیتا ہوں۔ یہاں میں نے اپنے ریکارڈ کو دہرانے کے لیے خود واپس جانا ضروری سمجھا جس کے بارے میں وہ جانتے ہیں: میں نے انہیں سمجھا دیا کہ میں صدارتوں یا کرسیوں کی خواہش رکھنے والا نہیں ہوں۔"(...)



پیر-28 ذوالقعدہ 1443 ہجری، 27 جون 2022ء، شمارہ نمبر (15917)

 


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا