ویانا میں امریکہ ایران کے نئے مذاکرات

ویانا میں امریکہ ایران کے نئے مذاکرات

جوہری معاہدے کی بحالی کے لیے خصوصی طور پر "بوریل تجویز" پر توجہ مرکوز
جمعرات, 4 August, 2022 - 11:00
اینریک مورا اور رابرٹ میلے ویانا میں ایرانی جوہری مذاکرات کے موقع پر، 20 جون، 2021 (ای.پی.اے)

ریاست ہائے متحدہ امریکہ اور ایران 2015 کے جوہری معاہدے کو بحال کرنے کی سفارتی کوششوں میں ناکامی کے تقریباً پانچ ماہ بعد ویانا میں بالواسطہ مذاکرات کے ایک نئے دور کی طرف بڑھ رہے ہیں۔
مذاکرات کے یورپی کوآرڈینیٹر اینریک مورا نے اعلان کیا کہ وہ معاہدے پر واپسی کی خاطر بات چیت مکمل کرنے کے لیے ویانا جا رہے ہیں۔
ایک سینئر یورپی ذریعے نے "الشرق الاوسط" کو بتایا کہ یہ مذاکرات دیگر فریقین کی شرکت کے بغیر صرف ایرانی اور امریکی وفود تک محدود ہیں۔  انہوں نے زور دیا کہ اس کا مقصد یورپی یونین کے خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزپ بوریل کے پیش کردہ متن پر بحث کرنا ہے۔ ذریعہ نے کہا کہ "بوریل کی تجویز سے باہر کوئی نیا خیال نہیں ہے."
گزشتہ ہفتے بوریل نے انکشاف کیا کہ انہوں نے تہران اور واشنگٹن کو ایک مفاہمتی مسودہ  پیش کیا ہے،  انہوں نے فریقین پر زور دیا کہ وہ "سنگین بحران" سے بچنے کے لیے اسے قبول کریں۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ "اس میں تمام بنیادی عناصر شامل ہیں اور اس میں وہ تصفیے بھی شامل ہیں جن تک تمام فریق مشکل سے پہنچے ہیں۔"(...)


جمعرات - 7 محرم 1444ہجری - 04 اگست 2022ء شمارہ نمبر [15955]

 


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا