پوٹن اور اردوغان کی ملاقات سے پہلے شمالی شام میں ترکی کی بڑھتی ہوئی کشیدگی

پوٹن اور اردوغان کی ملاقات سے پہلے شمالی شام میں ترکی کی بڑھتی ہوئی کشیدگی

جمعرات, 4 August, 2022 - 17:30
حلب کے شمال میں واقع تادیو قصبے میں ترکی کی حمایت یافتہ شامی جنگجوؤں کو حکومت کے زیر کنٹرول علاقوں کے سامنے پر دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
روسی صدر ولادیمیر پوتن اور ان کے ترک ہم منصب رجب طیب اردوغان کے درمیان جمعے کے دن سوچی میں متوقع ملاقات سے 48 گھنٹے قبل شمالی شام میں منبج اور تل رفعت شہروں کے علاقوں اور دیہاتوں میں ترک أفواج، شامی حکومت کی افواج اور "سیرین ڈیموکریٹک فورسز"  کے درمیان جھڑپیں دیکھنے میں آئیں ہیں اور اس ملاقات میں شام کی فائل اور روس کی جانب سے اس علاقے میں ان کے خلاف ممکنہ فوجی کارروائی کو مسترد کرنے کے بارے میں بات چیت ہوگی۔

اردوغان کے دورے سے پہلے روسی افواج کے افسران کی نگرانی میں شامی حکومت کی افواج نے ہفتے کے روز منبج میں "ایس ڈی ایف" کے ساتھ فوجی مشقیں کی ہے جس میں زمینی اور بحری افواج کی تربیت بھی شامل ہے جو 2015 میں شامی اتحاد کے ظہور کے بعد پہلی مرتبہ ہوا ہے اور ان مشقوں میں بڑے پیمانے پر ٹینکوں کے دریا کے پانیوں کو عبور کر کے مخالف کنارے تک پہنچنے کے لئے روسی ہیلی کاپٹروں اور ایس ڈی ایف کی طرف سے توپ خانے کی گولہ باری کے علاوہ روسی فضائی دفاعی نظام کے ذریعہ ایک فوجی جہاز کو نشانہ بنانے کی تربیت بھی شامل ہے جو تربیتی علاقے کے آسمان پر اڑ ڑہا تھا۔(۔۔۔)


جمعرات  07   محرم الحرام  1444 ہجری   -  04 اگست   2022ء شمارہ نمبر[15955]  


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا