اسرائیل نے "حماس" کو خارج کرتے ہوئے غزہ میں "اسلامی جہاد" تحریک پر کیا حملہ

اسرائیل نے "حماس" کو خارج کرتے ہوئے غزہ میں "اسلامی جہاد" تحریک پر کیا حملہ

ہفتہ, 6 August, 2022 - 10:00
گزشتہ روز غزہ شہر کے وسط میں عمارتوں پر اسرائیلی فضائی حملے کے بعد تباہی کے اثرات کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
کل اسرائیلی لڑاکا طیاروں اور ڈرونز نے صبح صادق کے نام سے ایک فوجی آپریشن میں "اسلامی جہاد" تحریک کے متعدد مقامات پر حملہ کیا ہے اور اسرائیل نے حماس کے مقامات پر بمباری کرنے سے گریز کیا ہے کیونکہ اس نے غیر جانبداری کا مظاہرہ کیا ہے لیکن اسے مداخلت نہ کرنے کی تنبیہ کی گئی ہے جبکہ دھڑوں نے جنوبی اسرائیل کے قصبوں پر درجنوں راکٹ فائر کرکے جواب دیا ہے۔

اسرائیلی آپریشن اس دعویٰ کے ساتھ قبل از وقت تھا کہ "جہاد" تحریک مغربی کنارے میں اپنے رہنما بسام السعدی کی گرفتاری اور توہین کے جواب میں جوابی حملے شروع کرنے پر اصرار کررہا ہے اور اسرائیل کا کہنا ہے کہ "جہاد" تحریک کی تناؤ کی کیفیت ایرانی رہنماؤں کے ساتھ ملاقاتوں کے لئے تہران میں سیکریٹری جنرل زیاد نخالہ کی موجودگی کی وجہ سے ہوئی ہے اور اس نے لبنانی حزب اللہ اور ایران کے دوسرے ہتھیاروں کو جنگ میں شامل کرنے کے خلاف خبردار کیا ہے۔


دوسری طرف "جہاد" نے اس آپریشن کو ایسی جنگ کا اعلان سمجھا ہے جس کا مقصد مزاحمت اور فلسطینی مزاحمتی تنظیموں کے جذبے کو ختم کرنا اور اس طرح فلسطینی کاز کو ختم کرنا ہے اور اس نے اپنے ان متعدد رہنماؤں کی ہلاکت کی خبر فلسطینی عوام کو دیا ہے جن میں القدس بریگیڈ فورسز کے کمانڈر تيسير الجعبری اور میزائل فورسز یونٹ کے کمانڈر عبد اللہ قدوم سر فہرست ہیں۔(۔۔۔)


ہفتہ  09   محرم الحرام  1444 ہجری   -  06 اگست   2022ء شمارہ نمبر[15957]  


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا