ایرانی ڈرون نے شام میں التنف بیس پر حملہ کر دیا ہے

ایرانی ڈرون نے شام میں التنف بیس پر حملہ کر دیا ہے

منگل, 16 August, 2022 - 14:30
التنف اڈے پر ڈرونز کے ذریعہ نشانہ بنانے کی تصویر ٹویٹر پر "مغاویر الثورہ" اکاؤنٹ کی طرف سے شائع دیکھی جا سکتی ہے
پیر کی صبح ایرانی سمجھے جانے والے ڈرونز نے "مغاویر الثورہ آرمی" کے فوجی ٹھکانوں کو جنوب میں شام، عراق اور اردن کے مثلث علاقہ میں واقع امریکی التنف اڈے پر حملہ کیا ہے۔

اس حملے کے بعد آئی ایس آئی ایس کا مقابلہ کرنے والے بین الاقوامی اتحاد نے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا کہ 15 اگست 2022 کو پیر کی صبح تقریباً 06:30 بجے آپریشن موروثی حل فورسز نے "مغاویر الثورہ آرمی" کے شراکت داروں کے ساتھ مل کر ایک جوابی کارروائی کی ہے جسے التنف گیریژن کے آس پاس ڈرون کے ذریعہ انجام دیا گیا ہے اور اتحاد ایک طیارہ مار گرانے میں کامیاب ہوا ہے اور دوسرے طیارے کو اڑا دیا ہے جس سے اس کا اثر جاتا رہا ہے اور دیگر یک طرفہ طیاروں کے حملے جو فورسز کے احاطے کے اندر کیے گئے تھے ان میں کوئی چوٹ یا نقصان نہیں ہوا ہے۔


انقلابی کمانڈو آرمی کے میڈیا آفس کے سربراہ عبد الرزاق خضر نے الشرق الاوسط کو بتایا ہے کہ بیس کو تین ڈرونز سے نشانہ بنایا گیا ہے جن میں سے ایک کو نشانہ بنایا گیا، اور دوسرا مار گرایا گیا اور بغیر پھٹنے کے ناکارہ بنا دیا گیا، اور تیسرا طیارہ تباہ ہوگیا جو اڈے پر ہدف والے مقام سے دور گرنے سے پہلے ہی پھٹ گیا۔(۔۔۔)


منگل 18 محرم الحرام 1444ہجری -  16 اگست   2022ء شمارہ نمبر[15967]  


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا