لبنان: بینکوں کی مسلسل بندش مالیاتی لین دین میں رکاوٹ ہے

لبنان: بینکوں کی مسلسل بندش مالیاتی لین دین میں رکاوٹ ہے

جمعرات, 22 September, 2022 - 14:30
لبنانیوں کو کل بیروت میں ایک بند بینک برانچ میں خودکار ٹیلر مشینوں کے سامنے دیکھا جا سکتا ہے (رائٹرز)
34 سالہ چاربل اگلے مہینے کے آغاز تک بینکوں کی مسلسل بندش سے خوفزدہ ہیں اور ایک الیکٹرانک ڈیزائن کمپنی کے ملازم کا کہنا ہے کہ ہم اپنی تنخواہ کا بے صبری سے انتظار کر رہے ہیں اور ہڑتال کا کوئی بھی تسلسل ہمارے حق میں نہیں ہوگا اور وہ اور ان کا خاندان اپنی تنخواہ سے گزارہ کرتا ہے جو بیرون ملک سے اس کے اکاؤنٹ میں منتقل ہوتی ہے۔

چاربل ان خدشات کو ان دسیوں ہزار لبنانیوں کے ساتھ شیئر کرتے ہیں جو ہر مہینے کے شروع میں اے ٹی ایم سے اپنی تنخواہیں نکالتے ہیں اور وہ ی سمجھتے ہیں کہ ہفتے کے آغاز سے ہی بینکوں کی بندش نے ان ملازمین اور لوگوں کی زندگیوں کو متاثر نہیں کیا ہے جو محدود آمدنی کے ساتھ ہر مہینے کے شروع میں اپنی تنخواہیں نکالنے میں جلدی کرتے ہیں اور یہ دیکھتے ہوئے کہ وہ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران جو ان کے بینک اکاؤنٹ تک پہنچتا وہ اسے نکل لیتے ہیں لیکن یقینی طور پر اگر بندش جاری رہی تو اس کے اثرات ہم پر مرتب ہونے والے ہیں کیونکہ منتقلی ہمارے کھاتوں تک نہیں پہنچنے والے ہیں اور اس لئے ہم کیسے گزارہ کریں گے اور اپنے خاندانوں پر خرچ کیسے کریں گے جیسا انہوں نے  پوچھا ہے۔


گزشتہ پیر سے لبنانی بینکوں نے لبنانی ڈپازٹرز کی بینکنگ برانچوں میں ہنگامہ آرائی کے خلاف ہڑتال شروع کر رکھی ہے اور ساتھ ہی تین سال قبل منجمد ہوئے اپنے رقم کو حاصل کرنے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ ان میں سے کچھ لوگ بینکوں کو منجمد ڈپازٹ کا کچھ حصہ ادا کرنے پر مجبور کرنے میں کامیاب ہو گئے اور دیگر افراد ناکام ہوئے ہیں اور لبنانی حکام نے اس میں ملوث کچھ افراد کو گرفتار بھی کیا ہے اور یہ بینکوں کی ایسوسی ایشن کی طرف سے ہڑتال سے پہلے ہوا ہے اور حکام کو اس مخمصے کا کوئی حل نہ مل جائے جس سے ملازمین کی حفاظت ہو سکے۔(۔۔۔)


جمعرات 26 صفر المظفر 1444ہجری -  22 ستمبر   2022ء شمارہ نمبر[16004]    


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا