دمشق کے ساتھ انٹیلی جنس رابطے تعلقات کا تعین کریں گے: اردگان

دمشق کے ساتھ انٹیلی جنس رابطے تعلقات کا تعین کریں گے: اردگان

جمعہ, 30 September, 2022 - 05:45
17 ستمبر 2022 کو گورنریٹ ادلب کے لیے ایک بین الاقوامی انسانی امداد کا قافلہ (اے ایف پی)

ترک صدر رجب طیب اردگان نے زور دے کر کہا کہ شامی حکومت کے ساتھ ان کے ملک کے روابط فی الحال انٹیلی جنس سروس تک محدود ہیں اور ترکی ان رابطوں کے نتائج کی بنیاد پر دمشق کے ساتھ اپنے تعلقات کی شکل کا تعین کرے گا۔ اردگان نے بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب ایک ٹیلی ویژن انٹرویو میں کہا کہ ترک انٹیلی جنس دمشق میں اپنے مذاکرات کر رہی ہے اور ترکی ان مذاکرات کے نتائج کے مطابق اپنا روڈ میپ طے کرے گا۔
ترک صدر نے شمالی شام میں فوجی آپریشن کی دھمکی کو دہراتے ہوئے روس اور ریاست ہائے متحدہ امریکہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ترکی کی سرحد سے 30 کلومیٹر دور کرد "عوامی حفاظتی یونٹس" کو ہٹانے کے بارے میں 2019 میں ان کے ملک کے ساتھ طے پانے والی مفاہمت پر عمل درآمد کریں۔
دریں اثنا، امریکی کانگریس میں ایک اقدام سامنے آیا ہے جس کا مقصد شام میں تنظیم "داعش" کے فروغ کو روکنا اور ملک کے شمال مشرق میں 56 ہزار سے زائد افراد کو پناہ دینے والے "الہول کیمپ" کو بند کرنا ہے، جس میں زیادہ تر خواتین اور بچے ہیں، اور ان میں سے کچھ "داعش" کے خاندان ہیں۔(...)


جمعہ - 5 ربیع الاول 1444 ہجری - 30 ستمبر 2022ء شمارہ نمبر [16012]

 


Related News



انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا