اتحادی حملہ میں حوثی انقلاب کی دوسری اہم قیادت ہلاک

اتحادی حملہ میں حوثی انقلاب کی دوسری اہم قیادت ہلاک

منگل, 24 April, 2018 - 12:15
اتحادیوں کی جانب سے نشر کردہ ویڈیو کی ایک تصویر جس میں فضا سے کی جانے والی بمباری کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے ۔۔۔ فریم فوٹو میں صمادکو ماہ کے آغاز میں اپنے حامیوں سے ملاقات کے دوران دیکھا جا سکتا ہے ("الشرق الاوسط")
کل یقین دہانی کی گئی ہے کہ گزشتہ جمعرات کو یمن کے گورنریٹ حدیدہ میں یمن کی قانونی حکومت کے حمایتی اتحاد کے طیاروں کی بمباری میں حوثی انقلابی جماعت کی دوسری اہم قیادت صالح صماد ہلاک ہو گئے ہیں۔ (۔۔۔)
      صماد کا شمار یمن کی قانونی حکومت کے حمایتی اتحاد کی خطرناک ترین 40 مطلوبہ افراد کی فہرست میں عبد الملک کے بعد دوسرے نمبر پر مطلوبہ شخص کے طور پر تھا، جبکہ اس فہرست میں دہشت گرد حوثی جماعت میں دہشت گردی کی سرگرمیوں اور کاروائی میں ملوث قیادتیں اور ذمہ دار عناصر شامل ہیں، اور اتحادیوں نے اس میں شامل افراد کی گرفتاری کے لئے کسی بھی قسم کی معلومات فراہم کرنے والے کے لئے 20 ملین ڈالر کا انعام رکھا تھا۔
      دریں اثنا، کل حوثی ملیشیاؤں کی طرف سے یمن کی سرزمین سے جنوبی سعودی عرب کے شہر جازان کی جانب داغے گئے دو بیلسٹک میزائلوں کو یمن میں قانونی حکومت کے حمایتی اتحاد کے ماتحت فضائی دفاع نے بلا کسی نقصان کے مار گرایا ہے۔

 
منگل – 8 شعبان 1439 ہجری – 24 اپریل 2018ء شمارہ نمبر:  [ 14392]

Related News



انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا