لیبیا کے قبائل: حملہ آوروں کو نکالا جائے اور ملیشیاؤں کو ختم کیا جائے

لیبیا کے قبائل: حملہ آوروں کو نکالا جائے اور ملیشیاؤں کو ختم کیا جائے

پیر, 22 June, 2020 - 10:30
گزشتہ جمعرات کے دن سرت جاتے ہوئے لیبیا کی نیشنل فورسز کو دیکھا جا سکتا ہے (اے ایف پی)
پرسو روز مصر کے صدر عبد الفتاح السیسی کی طرف سے لیبیا میں ترکی کے لئے سرخ لائن کھینچنے کے اقدام کا بڑے پیمانے پر خیر مقدم کیا گیا ہے جبکہ لیبیا کی قبیلوں کی سپریم کونسل نے گزشتہ روز ایک بیان میں اعلان کیا ہے کہ سیاسی حل حملہ آوروں کو بے دخل کرنے، ملیشیاؤں سے ہتھیار لے لینے، سیاسی راستے اور (قومی) فوج کی کوششوں کی حمایت اور اس کے فوائد کو برقرار رکھنے کے ذریعہ ہی شروع ہو سکتا ہے۔

اسی کے ساتھ پرسو شام سرت شہر میں ہزاروں کرائے کے فوجیوں اور الوفاق کے ملیشیاؤں کے ذریعہ ترک مسلح حملے کی دھمکیوں کے خلاف مظاہرے نکلے ہیں جن میں لوگوں نے قومی فوج کی حمایت کی تصدیق کی ہے اور شہر کے دفاع میں مصری مداخلت کا خیر مقدم کیا ہے۔


مظاہرے کی دعوت میں سول سوسائٹی کی تنظیموں، کارکنوں، میڈیا کارکنوں، سیاست دانوں  عمائدین اور ملک کے مشرق میں واقع متعدد شہروں میں موجود لیبیا کے قبائل کے اہم شخصیات نے شکت کی ہے اور ان شہروں میں بنغازی، البیضاء، درنة،  طبرق، المرج اور اجدابیا بھی شامل ہیں۔


پیر 01 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 22 جون 2020ء شماره نمبر [15182]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا