پومپیو نے ایرانی اسلحے کے نتائج سے کیا خبردار

پومپیو نے ایرانی اسلحے کے نتائج سے کیا خبردار

بدھ, 1 July, 2020 - 17:00
گزشتہ روز گٹیرس کی موجودگی میں ایرانی فائل کے سلسلہ میں سلامتی کونسل کے ممبروں کے مابین ویڈیو کے ذریعہ ہونے والے اجلاس کے منظر کو دیکھا جا سکتا ہے (اقوام متحدہ)
امریکہ نے کل اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ممبروں سے باضابطہ طور پر مطالبہ کیا ہے کہ وہ اکتوبر کے ختم ہونے سے قبل ایران پر بین الاقوامی سطح پر عائد اسلحہ کی پابندی میں توسیع کرے اور اسی کے ساتھ علاقائی اور یورپی سلامتی اور عالمی معیشت پر پڑنے والے اس کی ناکامی کے نتائج سے آگاہ بھی کیا ہے۔

سلامتی کونسل نے جوہری ہتھیاروں اور بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے تحت ایران پر قرارداد 2231 کے نفاذ سے متعلق اجلاس منعقد کیا ہے جس میں اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گٹیرس اور امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو اور ایرانی محمد جواد ظریف نے شرکت کی ہے۔


پومپیو نے سلامتی کونسل کو ایران کے خلاف اپنی ذمہ داریوں کو ترک کرنے سے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلحے کی پابندی کی تجدید میں ناکامی سے ایران تین ہزار کلومیٹر تک مار کرنے والا روسی ساختہ جنگی طیارے خرید سکتا ہے اور ریاض، نئی دہلی، روم اور وارسو جیسے شہروں کو اپنا نشانہ بنا سکتا ہے۔(۔۔۔)


بدھ 10 ذی القعدہ 1441 ہجرى - 01 جولائی 2020ء شماره نمبر [15191]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا