الشرق الاوسط سے الکاظمی کی گفتگو: ہم نے تعلیم سے آزادی کا تخمینہ لگایا ہے

الشرق الاوسط سے الکاظمی کی گفتگو: ہم نے تعلیم سے آزادی کا تخمینہ لگایا ہے

پیر, 1 March, 2021 - 11:00
عراقی وزیر اعظم مصطفی الکاظمی نے کہا ہے کہ عراق کا مقدر وصیتوں سے آزاد ریاست بننا ہے اور انہوں نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ملک آج اپنا توازن بحال کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور الکاظمی نے راکٹ فائر کرنے والے گروہوں کی بھی مذمت کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ سیکیورٹی ادارے ان کا تعاقب کر رہے ہیں۔

الکاظمی نے پوپ فرانسس کے بغداد کے دورے سے چند روز قبل اور "میزائل حملوں" میں اضافے اور ان کے جوابات کے بعد الشرق الاوسط کے سوالات کا جواب دیا ہے۔


اس عراقی حکومت کی صورت حال کے بارے میں جو ایران اور امریکہ کے درمیان ایک مشکل خطے میں مقیم دکھائی دے رہا ہے اور عراق وصیتوں سے آزاد ایک عام ریاست ہوسکتا ہے یا نہیں اس کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں الکاظمی نے جواب دیا ہے کہ آج یہ نہیں کہا جا سکتا ہے کہ عراق بطور بحیثیت ایک ملک بین الاقوامی یا علاقائی وصیتوں کے تحت جی رہا ہے لیکن کچو سیاسی حالات اور غیر معمولی غلطیاں موجود ہیں جو گزشتہ عشروں میں عراقی عوام کے خلاف کی گئی ہیں۔(۔۔۔)


پیر 18 رجب 1442 ہجرى – 01 مارچ 2021ء شماره نمبر [15434]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا