آسٹرازینیکا ویکسین دوبارہ الزام کے دائرہ میں ہے

آسٹرازینیکا ویکسین دوبارہ الزام کے دائرہ میں ہے

بدھ, 7 April, 2021 - 18:30
کئی ممالک نے ایسٹرازینیکا کا استعمال بند کردیا ہے (اے پی)
کورونا وائرس کے خلاف "آسٹرزینیکا" ویکسین کو خون کے جمنے کی وجہ سے پھر سے اسے الزام کے دائرہ میں دیکھا جا رہا ہے۔

منگل کے روز شائع ہونے والے اطالوی اخبار ال ماسسیرو کو انٹرویو دیتے ہوئے یورپی میڈیسن ایجنسی کے ویکسین اسٹریٹیجک کے سربراہ مارکو کیولیری نے کہا ہے کہ اب ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ واضح طور پر ویکسین کا اس سے کوئی نہ کوئی ربط ہے لیکن ہمیں ابھی تک یہ معلوم نہیں ہوا ہے کہ اس رد عمل کا سبب کیا ہے۔۔۔ مختصر یہ کہ اگلے چند گھنٹوں میں ہم یہ کہ سکیں گے کہ اس سے اس کا کوئی تعلق ہے لیکن ہمیں ابھی بھی اس کی کیفیت کو سمجھنا ہوگا کہ آخر یہ کیسے ہوتا ہے۔


اسی سلسلہ میں امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے تصدیق کی ہے کہ صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ آنے والے مہینوں میں کورونا وائرس سے متعلق مزید ویکسین دوسرے ممالک کے ساتھ بانٹنے کے لئے آپشنز کی تلاش کر رہی ہے۔(۔۔۔)


بدھ 25 شعبان المعظم 1442 ہجرى – 07 اپریل 2021ء شماره نمبر [15471]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا