بین الاقوامی امداد تیونس میں وبا کے خلاف جدوجہد میں امید کی ایک کرن

بین الاقوامی امداد تیونس میں وبا کے خلاف جدوجہد میں امید کی ایک کرن

جمعرات, 15 July, 2021 - 19:30
"رائٹرز" کے مطابق دارالحکومت تیونس کے چارلس نیکول اسپتال میں ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ ان "کوویڈ 19" مریضوں سے کھچا کھچ بھر گیا ہے جو واڈوں اور حتی کہ گلیریوں میں آپس میں آکسیجن تقسیم کر رہے ہیں جبکہ ملک میں کورونا کیسوں مزید اضافہ دیکھنے کو ملا ہے اور وبائی امراض کی وباء پر قابو پانے کف لئے امید کی کرن کے طور پر غیر ملکی امدادات بھی مل رہی ہیں۔

پچھلے سال پہلی لہر میں کامیابی کے ساتھ وائرس پر قابو پانے کے بعد ابھی تیونس مشکل وقت سے گزر رہا ہے کیونکہ ملک کے تمام اسپتالوں میں انتہائی نگہداشت محکمیں بھر چکے ہیں اور ڈاکٹر بھی کورونا کے تیزی سے پھیلنے اور مرنے والوں کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے تھک چکے ہیں اور ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ میں ایک کمپاؤنڈر احمد الغول نے رائٹرز کو بتایا ہے کہ ڈاکٹر تھک چکے ہیں کیونکہ مریضوں کی تعداد اسپتال کی گنجائش سے تجاوز کر چکی ہے۔۔۔ یہاں تک کہ مردہ خانہ بھی پُر ہے اور ان کے لئے ہمیں مزید جگہ نہیں مل پا رہی ہے۔(۔۔۔)


جمعرات 05 ذی الحجہ 1442 ہجرى – 15 جولا‏ئی 2021ء شماره نمبر [15570]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا