عمان اور اقوام متحدہ نے یمن میں جنگ بندی کی پائیداری پر دیا زور

عمان اور اقوام متحدہ نے یمن میں جنگ بندی کی پائیداری پر دیا زور

بدھ, 22 June, 2022 - 13:15
یمنی وزیر خارجہ کو ناروے کے وزیر خارجہ سے ملاقات کے دوران دیکھا جا سکتا ہے (سبا)
عمانی وزیر خارجہ بدر بن حمد البوسعیدی اور یمن کے لیے امریکی ایلچی ٹم لینڈرکنگ نے کل مسقط میں بات چیت کی ہے جس میں یمن میں موجودہ جنگ بندی کو بااختیار بنانے اور پائیداری کرنے پر زور دیا ہے۔

عمانی نیوز ایجنسی نے کہا ہے کہ اس ملاقات میں یمن میں جنگ بندی کو فعال اور برقرار رکھنے سے متعلق پیش رفت اور کوششوں کے ساتھ ساتھ تمام یمنی فریقوں اور فورسز کے درمیان اعتماد اور تعمیری بات چیت کو بڑھانے اور کی جانے والی کوششوں کی حمایت کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا ہے اور ایجنسی نے مزید کہا ہے کہ دونوں فریقوں نے یمن کے لیے اقوام متحدہ کے ایلچی ہانس گرانڈبرگ کی جنگ کے خاتمے اور ایک جامع سیاسی عمل میں داخل ہونے کی کوششوں کے لیے اپنی حمایت کا اعلان کیا ہے جس سے یمنی عوام کی سلامتی، استحکام اور امن کا حصول ہو سکے اور تعمیر نو، ترقی اور خوشحالی کے کام کئے جا سکے۔


متعلقہ سیاق وسباق میں حکومتی ٹیم کے ایک ذمہ دار نے تعز کراسنگ اور باقی علاقوں کو کھولنے کے بارے میں بات کرتے ہوئے اس بات سے متنبہ کیا ہے کہ حوثی گروپ اپنی ذمہ داریوں میں سے کسی کو لاگو کیے بغیر موجودہ جنگ بندی کو ختم کرنے کی کوشش کر رہا ہے جیسا کہ اس نے اس سے پہلے کیا تھا اور مذکورہ ذمہ دار نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کو ترجیح دیتے ہوئے الشرق الاوسط کو بتایا ہے کہ اقوام متحدہ کے ایلچی نے حوثیوں کے لیے اپنے وعدوں پر عمل درآمد کرنے کے لیے کوئی وقت بتائے بغیر معاملے کو کھلا نہ رکھنے کا عہد کیا ہے۔(۔۔۔)


بدھ  23  ذی القعدہ  1443 ہجری  - 22    جون   2022ء شمارہ نمبر[15912]


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا