واشنگٹن نے بیجنگ کے ساتھ رابطے کی لائنوں کو کھلا رکھا ہے

واشنگٹن نے بیجنگ کے ساتھ رابطے کی لائنوں کو کھلا رکھا ہے

اتوار, 7 August, 2022 - 11:30
تائیوان کی فضائیہ کے ارکان کو کل ہنچو ایئر بیس پر ایک جنگی طیارے کا معائنہ کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے (ای پی اے)
امریکہ چین کے ساتھ کشیدگی کو کم کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور ساتھ ہی اس نے رابطہ کی لائنوں کو کھلا رکھنے کے اپنے عزم پر زور دیا ہے اور امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے کل منیلا کے اپنے دورے کے دوران کہا ہے کہ واشنگٹن کسی بھی غلط فہمی سے بچنے کے لئے بیجنگ کے ساتھ رابطے کے راستے کھلے رکھے گا اور آبنائے تائیوان میں امن واستحکام کو یقینی بنانے کے لئے علاقائی تنظیموں اور اتحادیوں کے ساتھ مل کر کام بھی کرے گا۔

بلنکن نے مزید کہا کہ خطے میں ہمارے اتحادیوں اور شراکت داروں نے ہمیں بغیر کسی غیر یقینی کے الفاظ میں بتایا ہے کہ وہ آج ذمہ دار قیادت کی تلاش میں ہیں۔ لہٰذا، میں واضح کر دوں کہ امریکہ یہ نہیں مانتا کہ صورتحال کو بڑھانا تائیوان، خطے یا ہماری قومی سلامتی کے مفاد میں ہے۔


جمعہ کو وائٹ ہاؤس نے چین سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنی فوجی مشقیں روک دے تاکہ خطے میں کشیدگی کی سطح کو کم کیا جا سکے اور قومی سلامتی کونسل کے کمیونیکیشن کوآرڈینیٹر جان کربی نے کہا ہے کہ چینی اپنی اشتعال انگیز فوجی چالوں کو روک کر اور لہجے کو پرسکون کر کے کشیدگی کو کم کرنے کے لئے بہت کچھ کر سکتے ہیں۔(۔۔۔)


اتوار  10   محرم الحرام  1444 ہجری   -  07 اگست   2022ء شمارہ نمبر[15958]  


انتخاباتِ مدير

ملٹی میڈیا